چنائے:بھارتی ریاست تامل ناڈو میں 17افراد کی جانب سے 11سالہ بچی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعدچار افراد نے 21سالہ ر وسی خاتون سیاح کو ایک گیسٹ ہاﺅس میں شراب پلا کر اجتماعی جنسی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا ، ملزمان نے ر وسی خاتون کے جسم کو دانتوں سے کاٹ کاٹ کر زخمی کردیا۔تفصیلات کے مطابق تامل ناڈو کے ایک ریسٹورنٹ میں 21سالہ روسی خاتون سیاح سے اجتماعی جنسی زیادتی کی گئی ۔ پولیس نے شک کی بناءپر چار افراد کو حراست میں لے لیا ہے ۔پولیس کے مطابق روسی خاتون سیاح گیسٹ میں بے ہوش پا ئی گئی جس پرگیسٹ ہاﺅس میں موجود افراد اس کو مقامی ہسپتال میں لے گئے ۔ڈاکٹر ز کے مطابق خاتون کے جسم پر زخموں کے نشانات ہیں جن میں اکثر دانتوں سے کاٹے جانے کی وجہ سے پڑے ہیں۔پولیس کے مطابق خاتون کو بہت زیادنشہ آور اد ویات دی گئی ہیں جن کے باعث وہ اپنے حواس کھو بیٹھی ہے اور سوالوں کے صحیح طرح سے جواب نہیں دے ر ہی ہے ۔ پولیس کی جانب سے تفیش کے دوران خاتون کا موقف جاننے کے لئے ایک ترجمان کی مدد لی جا رہی ہے ۔خاتون سیاح سے جنسی زیادتی کرنے کے شبے میں پولیس چار مشکوک افراد سے تفتیش کررہی ہے جن میں ایک گیسٹ ہاﺅس کا مالک ، اس کابھائی ، ایک مددگار اور ایک ٹیکسی ڈرائیور شامل ہے ۔روسی خاتون سیاح ایک ہفتے سے مذکورہ ریسٹورنٹ میں رہ رہی تھی جہاں اس کو مبینہ طور پر اجتماعی زیادتی کانشانہ بنایا گیا ۔بھارتی ریاست تامل ناڈو میں وہ ریسٹورنٹ جہاں روسی خاتون سیاح کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا