لاہور: لاہور ہائیکورٹ نے سرکاری اجلاسوں کی صدارت کے خلاف درخواست پر پاکستان تحریک انصاف کے نااہل رہنما جہانگیر ترین اور وفاقی حکومت کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کرلیا۔گزشتہ روز لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس عابد عزیز شیخ نے جہانگیر ترین کے سرکاری اجلاسوں میں شرکت کے خلاف ایڈووکیٹ شعیب سلیم چوہدری کی درخواست پر سماعت کی۔درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ پی ٹی آئی رہنما جہانگیر ترین کو سپریم کورٹ نے تاحیات نااہل کیا ہے، لیکن اس کے باوجود انہوں نے وزیر اعظم سیکریٹریٹ میں حکومتی اجلاسوں کی صدارت کی۔نااہل جہانگیر ترین نے حکومتی اجلاسوں کے دوران بریفنگ لی اور احکامات جارے کیے جبکہ انہیں اجلاسوں کی صدارت کی اجازت دے کر سپریم کورٹ کے فیصلے کی نفی کی گئی۔درخواست میں عدالت سے استدعا کی گئی کہ تاحیات نااہل جہانگیر ترین کو حکومتی اجلاسوں کی صدارت کرنے سے روکا جائے اور ان پر حکومتی اجلاسوں کی صدارت پر مستقل پابندی عائد کی جائے۔عدالت نے جہانگیر ترین اور وفاقی حکومت کو نوٹس جاری کرتے ہوئے معاملے پر 4دسمبر تک جواب طلب کرلیا۔