اسلام آباد(عباس ملک سے )وزیراعظم عمران خان نے نئی معاشی پالیسی پر عوام اور پارلیمنٹ کو اعتماد میں لینے کی ہدایت کی ہے,وزیراعظم نے خود بھی ہر فورم پر حکومتی معاشی اصلاحات پر نکتہ نظر دینے کا فیصلہ کیا ہے۔نجی ٹی وی چینل کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت اعلیٰ سطح کا مشاورتی اجلاس ہوا جس میں وفاقی وزراء، پارٹی رہنماؤں اور معاشی ماہرین نے شرکت کی،جس میں حکومت کو درپیش معاشی چیلنجز کی نئی حکمت عملی پر غور کیا گیا،اجلاس میں آئی ایم ایف سے قرض لینے، دوست ممالک سے تعاون اور سرمایہ کاری کے آپشنز کا جائزہ لیا گیا،معاشی ماہرین کی جانب سے حکومت کو معیشت کی بہتری کے آپشنز پر بریفنگ دی گئی۔معاشی ماہرین نے حکومت کو مشورہ دیا کہ کم عرصہ کے لیے آئی ایم ایف پروگرام لےکر حکومتی اخراجات کم کیے جائیں،وزیراعظم عمران خان نے معاشی حکمت عملی پر عوام کو تمام پہلوؤں پر اعتماد میں لینے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ سابقہ حکومت کی غلط پالیسیوں کے منفی نتائج سےعوام کو آگاہ کیا جائے،اجلاس میں نئی معاشی پالیسی اور حکمت عملی پر پارلیمنٹ کو بھی اعتماد میں لینے کا فیصلہ کیا گیا،وزیر اعظم نے اجلاس میں حکومتی میڈیا ٹیم کی غیر مؤثر کارکردگی پر ناپسندیدگی کا اظہار بھی کیا۔وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ نئی حکومت کے چیلنجز ماضی کی حکومتوں سے کہیں سے زیادہ ہیں اور چیلنجز سے نمٹنے کے لیے مشکل فیصلے کرنے پڑ رہے ہیں, آئی ایم ایف کےپاس جانےکافیصلہ مجبوری میں کیا، , وزراء اورترجمان عوام کوحقائق سے آگاہ کریں,وزیراعظم نے خود بھی ہر فورم پر حکومتی معاشی اصلاحات پر نکتہ نظر دینے کا فیصلہ کیا ہے.