پیر محل : پنجاب اسمبلی کے حلقہ پی پی میں دوبارہ گنتی کے نتیجے میں تحریک انصاف کی خاتون سونیا علی رضا 14 ووٹوں سے کامیاب ہوگئیں۔ اس سے قبل گنتی میں ن لیگ کے سید قطب علی 17 ووٹوں سے جیتے تھے۔  پنجاب اسمبلی کے حلقہ پی پی 123میں دوسری بار ہونے والی ری کاﺅنٹنگ میں تحریک انصاف کی سونیا علی رضا کامیاب قرار پائی ہیں۔ پی پی 123 کے 209 میں سے 188پولنگ اسٹیشنز پر تحریک انصاف کی سونیا علی رضا کو 14ووٹوں کی برتری حاصل ہوئی۔ 21پولنگ سٹیشنز کی گنتی ہائی کورٹ کے حکم پرپہلے ہی مکمل ہو چکی ہے۔ گنتی ا±س وقت دلچسپ صورتحال اختیار کر گئی جب 188پولنگ سٹیشنزکی گنتی مکمل ہوئی تو تحریک انصاف کی سونیا رضا کو 43 ووٹوں کی برتری حاصل ہو گئی۔ سونیا علی رضا کے پولنگ ایجنٹ مہر اقبال ہمجانہ نے آر او کو گنتی روکنے کی استدعا کی اور کہا سونیا رضا کو 43کی لیڈ حاصل ہے ۔ مسلم لیگ ن کے امیدوار کو جن 21پولنگ اسٹیشن سے 17کی برتری ملی تھی، وہ تو 188 پولنگ سٹیشنز میں ختم ہو چکی ہے اور چک 752کے اگر 12ضائع ووٹ بھی شامل کر لئے جائیں تب بھی برتری 14ووٹوں کی بنتی ہے۔ خیال رہے کہ انتخابات 2018 میں اس حلقے سے تحریک انصاف کی سونیا علی رضا کامیاب قرار پائی تھیں۔ ن لیگ کے امیدوار سید قطب علی کی درخواست پر دوبارہ گنتی کی گئی تو وہ 17 ووٹوں سے کامیاب قرار پائے۔ سونیا علی رضا نے دوسری بار ری کاﺅنٹنگ کے لیے سپریم کورٹ سے رجوع کیا جس کے بعد گنتی میں وہ کامیاب قرار پائیں۔