لاہور: احتساب عدالت نے پنجاب ہائی وے ڈیپارٹمنٹ میں 67 کروڑ روپے کے کرپشن کیس میں ایس ایچ او تھانہ بہاولپور کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر دیئے ۔احتساب عدالت کے جج محمد وسیم اختر نے کیس کی سماعت کی۔عدالت نے ایس ایچ او تھانہ بہاولپور کو ملزمان عاطف رشید اور محمد علی کو گرفتار کر کے پیش کرنے کا حکم دیا تھا لیکن ایس ایچ او نے نہ ملزم پیش کئے اور نہ خود پیش ہوئے ۔جس پر عدالت نے عدالتی حکم کی تعمیل نہ کرنے پر ایس ایچ او بہاولپور کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کرتے ہوئے سی پی او بہاولپور کو 19دسمبر کو ایس ایچ او کو گرفتار کر پیش کرنے کا حکم دیدیا ۔ سابق لینڈ ایکوزیشن کلکٹر میاں عبدالروف کی بریت کی درخواست بھی زیر سماعت ہے،درخواست گزار کے مطابق ہمیں غلط طور پر کیس میں ملوث کیا گیا لہٰذا 265K کے تحت بری کرنے کا حکم دیا جائے۔نیب پراسیکیوٹر کے مطاق نیب اس سے قبل میاں عبدالروف کے دو قریبی ساتھیوں غلام مصطفی اور محمد نسیم کو اسلام آباد سے گرفتارکر چکا ہے،رنگ روڈ اوردیگر سٹرکوں کی تعمیرو توسیع کے لئے حکومت کی طرف سے کروڑوں روپے کی رقم مختص کی گئی تھی ، ملزمان وقار اور نواز وغیرہ نے میاں روف کی ملی بھگت سے زمین خریداری کیلئے مختص 67 ملین کی رقم سے خطیر رقم خرد برد کی،نیب لاہور مرکزی ملزم عبدالروف سمیت اب تک 6 ملزمان کو حراست میں لے چکا ہے جبکہ ایک ملزم میاں تفضل اس کیس میں پلی بارگین کے تحت رہائی حاصل کر چکا ہے۔