شکارپور ( امیر علی بھٹو) انتخابات قریب مگر شکارپور کی پولنگ اسٹیشنیں سہولیات سے محروم ، انتظامیہ پولنگ اسٹیشنوں پر پانی ، بجلی اور واش روم کے بھی انتظام مکمل نہ کراسکی ،180پولنگ اسٹیشنوں پر پانی ، بجلی اور واش روم کی سہولیات سے محروم ،ڈی آر اوکی صدارت میں سہولیات کے متعلق دوسری مرتبہ اجلاس ، ڈی سی اور ڈی آر او کا انجینئر ایجوکیشن ورکس پر ہدایتوں پر عمل درآمد نہ کرنے پر سخت برہمی کا اظہار ۔ تفصیلات کے مطابق شکارپور کے انتخابات قریب ہونے کے باوجود ضلع کے اند رکئی پولنگ اسٹیشنیوں میں سہولیات موجود نہیں ،ضلع انتظامیہ اسکولوں میں قائم پولنگ اسٹیشنوں میں پانی ، بجلی اور واش روم کے انتظام بھی نہ کرسکی ہے ، اس سلسلہ میں گذشتہ روز ڈی آر او سہیل محمد لغاری کی صدارت میں اجلاس ہوا،جس میں ڈی سی شکارپور سمیت محکمہ تعلیم اور اسسٹنٹ کمشنروں نے شرکت کی ، اس موقعے پر انجینئر ایجوکیشن ورکس سلیم شیخ نے بتایا کہ ضلع کے اندر 1400 اسکولوں میں سے 328 اسکولوں میں پولنگ اسٹیشنیں قائم کی گئی ہیں جن میں 150 اسکولوں کی پولنگ اسٹیشنوں پر پانی ، بجلی اور واش روم کی سہولیات موجودہیں مگر صفائی کا مسئلہ ہے ،باقی 180 اسکولوں والی پولنگ اسٹیشنیں سہولیا ت سے محروم ہیں جن میں مرمتی کام ، پانی ، بجلی اور واش روم سمیت دیگر سہولیات مہیا کرنے کی ضرورت ہے ، جس پر ڈی آر او نے انجینئر ایجوکیشن ورکس پر سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ ایک ہفتہ قبل ایسی پولنگ اسٹیشنوں پر جلد سہولیات مہیا کرنے کرنے کی ہدایات کی گئی تھی مگر ان پر عمل درآمد نہیں کیا گیا ، ڈی آر او نے کہاکہ 20جولائی تک مذکورہ پولنگ اسٹیشنوں پر سہولیات مہیا کرنے والا کام مکمل نہیں ہوا تو کاروائی کی جائے گی اور روزانہ کی بنیاد پر مجھے رپورٹ پیش کی جائے جس کے بعد میں خود وزٹ کرکے جائزہ لوں گا اور میری وزٹ کے بعد ہی ٹھیکیداروں کو رقم جاری کی جائے ،ڈی سی شکارپور سید حسن رضا شاہ نے کہاکہ328 اسکولوں میں پولنگ اسٹیشنیں قائم ہیں مگر انجینئر ایجوکیشن ورکس صرف 150 اسکولو ں میں مرمتی کام اور دیگر سہولیات کے بارے میں سروے کی ہے باقی اسکولوں کا کام کس طرح ہوگا ، انہو ں نے کہاکہ328اسکولوں والی پولنگ اسٹیشنوں کی ہی سرو ے کی جائے ، انہو ں نے کہاکہ 60 انتہائی حساس پولنگ اسٹیشنوں پر سولر اور جنریٹر کا بھی بندوبست کیا جائے گا ۔