10

سی پیک کا ایک اور سنگ میل؛ آزاد پتن ہائیڈل پراجیکٹ معاہدے پر دستخط ہوگئے

اسلام آباد:  پاکستان اور چین نے آزاد پتن پن بجلی منصوبے کی تعمیر کے لئے معاہدے پردستخط  کردیئے۔آزاد پتن پن بجلی منصوبہ چین پاکستان اقتصادی راہداری کاحصہ ہے جس پر ڈیڑھ ارب ڈالر کی لاگت آئے گی اوراس سے 701  میگاواٹ سے زائد بجلی پیدا ہوگی۔اس منصوبے کے لئے ایندھن درآمد کرنے کی ضرورت نہیں ہوگی اور یہ ملک کو سستی اور آلودگی سے پاک بجلی پیداکرنے میں مدد دے گا، یہ منصوبہ دریائے جہلم پر واقع اور 2026 میں مکمل ہونے کی توقع ہے۔وزیر اعظم عمران خان نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے خواہش کا اظہار کیا کہ اقتصادی راہداری منصوبہ پاکستان کو بہت اوپر لیکر جائے گا، قرضے لیکر منصوبے بنانے سے ملک پر بوجھ پڑتا ہے، عوام کو سستی ماحول دوست بجلی فراہم کرنے کے لیے کوشاں ہیں۔چیئرمین سی پیک لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ عاصم سلیم باجوہ نے بھی تقریب سے خطاب کیا جنہوں نے بتایا کہ آزاد پتن ہائیڈرو منصوبےسے تین ہزار نئی نوکریاں پیدا ہوں گی۔چیئرمین سی پیک لیفٹیننٹ جنرل ریٹائرڈ عاصم سلیم باجوہ کے مطابق بجلی کے دو منصوبوں کوہالہ ہائیڈل پاور پراجیکٹ اور آزاد پتن ہائیڈل پراجیکٹ سے 4 ارب ڈالرز کی سرمایہ کاری ہو گی اور ان سے آٹھ ہزار افراد کو روزگار میسر آئے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں