36

علی ظفرکیخلاف نفرت انگیزمہم کیس؛ جرح کے دوران عفت عمرکی طبیعت بگڑ گئی

لاہور: گلوکارعلی ظفرکیخلاف نفرت انگیزمہم کیس میں جرح کے دوران اداکارہ عفت عمرکی طبیعت بگڑ گئی۔لاہورکے سیشن کورٹ میں گلوکارعلی ظفرکیخلاف نفرت انگیزمہم کیس پرسماعت ہوئی۔ ادکارہ عفت عمرنے جرح کے دوران کہا کہ میں نے گلوکارہ میشا شفیع کی والدہ صباء حمید کے ساتھ 1993 میں پہلا ڈرامہ ننگے پاؤں کیا، ڈرامے میں راحت کاظمی نامی شخص نے مجھے کئی بار گلے سے لگایا یہ بات مذاق میں پروگرام میں بولی تھی، میں نے پروگرام میں کہا تھا کہ میں نے راحت کاظمی کوگلے اپنے ٹھرک پوری کرنے کے لیے  لگایا تھا، اس وقت میری عمر19 سال تھی تب میں جوان تھی۔عفت عمرنے کہا کہ مجھے یاد نہیں ایف آئی اے میں علی ظفرنے میری خلاف شکایت بیان کے بعد درج کروائی یا پہلے، ایف آئی اے کے مقدمے میں میں عبوری درخواست ضمانت پرہوں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں