ماسکو: روسی وزارت خارجہ کی ترجمان ماریہ زخارووا نے کہا ھے کہ خطے سمیت افغانستان میں جاری دہشتگری کا خاتمہ کرنے کے لئے پاکستان کے ساتھ مل کر کام کرر رہے ہیں.ان کا کہنا تھا کہ گزشتہ ہفتے روسی نائب وزیر داخلہ ایگور زوبوو کی جانب سے سامنے آنے والا بیان جس میں کہا گیا تھا کہ پاکستان سے نامعلوم ہیلی کاپٹرز کے ذریعہ داعش کے شدت پسندوں کو روس تاجکستان سرحد پرمنتقل کیا گیا ہے۔محض زبان کا پھسلنا تھا. روسی وزارت خارجہ کی ترجمان کا کہنا تھا کہ ہم پاکستان کے ساتھ افغان امن ایجنڈے کو تکمیل تک پہنچانے، اور دونوں ممالک کے درمیان مشترکہ مفادات کے تحت داعش جیسی شدت پسند تنظیم کو افغانستان میں مستحکم ہونے سے روکنے کے لیے بھرپور تعاون کر رہے ہیں. ان کا کہنا تھا جہاں تک مشرق وسطیٰ کی ریاستوں کا سوال ہے اور اگر بات دہشت گردی کی جائے تو ہم صورت حال کا بغور جائزہ لے رہے ہیں کہ داعش ان ریاستوں میں منظم ہو رہی ہے یا نہیں.کیونکہ اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ ان ممالک کے باشندے داعش کے حملوں سے محفوظ بنایا جاسکے.