ہری پور: چینی ماہرین نے 17 سو قبل مسیح دور کے کھنڈرات سے بڑی تعداد میں پرانے نوادرات دریافت کرلیے۔خانپور کے قریب کھدائی کے دوران برآمد ہونے والے نوادرات میں مٹی کے برتن لوہے کے اوزار وں کی باقیات سمیت پتھر کی اشیا شامل ہیں جن کا تعلق آثار قدیمہ ہڑپہ اور انڈین تہذیت وثقافت سے ملتا ہے زرائع کے مطابق چین کی 3مختلف یونیورسٹیوں کے طلبا اور محکمہ آثار قدیمہ نے مشترکہ کاوشوں سے 17سو قبل مسیح دور کے کھنڈرات سے بڑی تعداد میں نوادرات دریافت کر لیے ہیں۔ذرائع نے بتایا ہے کہ نئے دریافت ہونے والے نوادرات کا تعلق ہڑپہ اور انڈین تہذیب سے ہے یہ نئی دریافت علاقہ میں تاریخ شناسی اور قدیم تاریخ کے بارے میں مزید اہم معلومات کے ساتھ تاریخ میں کلیدی کردار بھی ادا کرے گی۔ رابطہ کرنے پر محکمہ آثار قدیمہ کے زمہ دار ناصر خان نے اس بارے میں بتایا ہے کہ کھدائی کے دوران بڑی تعداد میں مٹی کے برتن، لوہے کے اوزار کی باقیات اور پتھر سے بنی اشیاء کی باقیات ملی ہیں انھوں نے کہا کہ دریافت شدہ اشیا کے متعلق تحقیقات کے بعد اس علاقے میں گندھارا تہذیب سے پہلے کی تاریخ کو سمجھنے میں مدد ملے گی۔