60

وزیراعظم کا جی ایچ کیو کا دورہ، سول وعسکری قیادت کا مل کر چلنے کا عزم

راولپنڈی: وزیراعظم شہباز شریف نے کابینہ اراکین کے ہمراہ جنرل ہیڈکوارٹرز (جی ایچ کیو) کا دورہ کیا جہاں عسکری قیادت سے ملاقات میں قومی سلامتی، علاقائی استحکام اور فوجی تیاریوں کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا، سول اور عسکری قیادت نے مل کر کام کرنے کا اعادہ کیا۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق وزیر اعظم شہباز شریف نے کابینہ کے اہم ارکان کے ہمراہ جنرل ہیڈ کوارٹرز راولپنڈی کا دورہ کیا جہاں آرمی چیف جنرل سید عاصم منیر نے ان کا استقبال کیا اور گارڈ آف آنر پیش کیا گیا۔وزیراعظم شہباز شریف نے یادگار شہدا پر پھولوں کی چادر چڑھائی اور شہدا کو خراج عقیدت پیش کیا۔اس موقع پر وزیراعظم اور کابینہ کے ارکان نے عسکری قیادت کے ساتھ قومی سلامتی، علاقائی استحکام اور فوجی تیاریوں کے امور پر بات چیت کی اور  وزیراعظم  کو موجودہ سیکیورٹی ماحول، خطرے کے اسپیکٹرم، سیکیورٹی خطرات سے نمٹنے اور انسداد دہشت گردی کی جاری کارروائیوں کے بارے میں بریفنگ دی گئی۔وزیراعظم اور کابینہ کے ارکان نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاک فوج کی پیشہ وارانہ مہارت، آپریشنل تیاریوں اور قربانیوں کو سراہا اور ملک کی علاقائی سالمیت کے تحفظ اور امن و استحکام کو یقینی بنانے میں پاک فوج کے عزم کو سراہا۔آئی ایس پی آر کے مطابق وزیراعظم نے کہا کہ حکومت مسلح افواج کی آپریشنل تیاری کو یقینی بنانے کے لیے درکار تمام وسائل فراہم کرے گی، پاکستان ترقی کی راہ پر ہے اور پاکستان کے پرامن ترقی یقینی بنانے میں مسلح افواج کا کردار  ہے۔آرمی چیف نے دورے اور فوج پر اعتماد بحال کرنے پر وزیر اعظم شہباز شریف کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ پاک فوج قوم کی توقعات پر پورا اترتی رہے گی اور پاکستان کو درپیش سیکیورٹی چیلنجز سے نمٹنے میں حکومت کی بھرپور حمایت کرے گی۔دورے کے اختتام پر سویلین اور عسکری قیادت نے قومی مفادات کو برقرار رکھنے، خوش حال اور محفوظ پاکستان کے لیے مل کر کام کرنے کے عزم کا بھی اعادہ کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں